سپورٹس بورڈ میں وزرات کے بھرتی کئے گئے ملامین کی تعیناتیاں غیر قانونی قرار ، گریڈ ایک سے 19ک کے کتنے افسر و اہلکار فارغ ہو گئے؟

اسلام آباد (این این آئی)اسلام آباد ہائیکورٹ نے وزارت بین الصوبائی رابطہ کی جانب سے بھرتی کئے گئے ملامین کی سپورٹس بورڈ میں تعیناتیاں غیر قانونی قرار دے دیں ۔ ہفتہ کو چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ جسٹس اطہر من اللہ نے تفصیلی فیصلہ جاری کر دیا ۔ ہائی کورٹ نے کہاکہ سپورٹس بورڈ میں بھرتیوں یا تعیناتیوں کا اختیار وزارت بین الصوبائی رابطہ کے پاس نہیں۔ ہائی کورٹ نے سپورٹس بورڈ کو وزارت کی جانب سے

تعینات کئے گئے گریڈ ایک سے انیس تک کے 10 ملازمین فارغ کرنے کا حکم دیا ۔ عدالت نے کہاکہ ملازمین کو پہلے بین الصوبائی رابطہ وزارت نے بھرتی کیا، بعد میں سپورٹس بورڈ میں تعینات کردیا، ملازمین کی ابتدائی بھرتی بھی میرٹ پر تھی یا نہیں یہ معاملہ بھی تحقیق طلب ہے۔اسلام آباد ہائیکورٹ نے کہاکہ ملازمین کی سپورٹس بورڈ سے فارغ ہونے کے بعد قانونی حیثیت کیا ہو گی یہ وفاقی حکومت فیصلہ کرے، میرٹ پر کوئی سمجھوتا نہیں ہو سکتا، سفارش پر بھرتیوں کے کلچر کو ختم کرنا ہی ہو گا۔اسلام آباد ہائیکورٹ نے کہاکہ غیر قانونی بھرتیاں ہی اداروں کو کمزور کرتی اور کرپشن کی راہ ہموار کرتی ہیں، غیر قانونی بھرتیاں عوام کے بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہیں۔اسلام آباد ہائیکورٹ نے کہاکہ سپورٹس بورڈ کا کام پاکستانی نوجوانوں کو عالمی سطح پر اپنا ٹیلنٹ دکھانے کا موقع فراہم کرنا ہے ۔۔۔۔۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں