بچوں اور خواتین کے ساتھ زیادتی کرنے والے مجرموں کو سزائے موت کا قانون بنانے کی تجویز آرڈیننس کا مسودہ آئندہ ہفتے کابینہ اجلاس میں منظوری کے لیے پیش کیا جائے گا

اسلام آباد (این این آئی)وفاقی حکومت نے بچوں اور خواتین کے ساتھ زیادتی کرنے والے مجرموں کو سخت سزا دینے کیلئے آرڈیننس لانے کا فیصلہ کر لیا۔وزیرِ اعظم عمران خان سے وزیرِقانون فروغ نسیم، بیرسٹر علی ظفر اور شیریں مزاری نے ملاقات کی ہے جس میںیہ فیصلہ کیا گیا ہے۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وزیرِ اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ زیادتی کے مجرموں کو سخت سزا دینے کے لیے آرڈیننس لایا جائے۔انہوں نے حکم دیا کہ یہ قانون ایسا ہونا چاہیے کہ مثاثرہ خواتین یا بچے

بلاخوف اپنی شکایات درج کرائیں۔وزیرِاعظم عمران خان نے ہدایت کی کہ بچوں اور خواتین سے زیادتی کے مجرموں کے خلاف سخت سے سخت قانون لایا جائے۔اس موقع پر وفاقی وزیرِ قانون فروغ نسیم نے کہا کہ زیادتی کے مجرموں کو کم سے کم سزا سے لے کرسزائے موت بھی تجویز کی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ زیادتی کیسزکی نشاندہی کے لیے عوام کو بھی رپورٹنگ کرنے کا اختیار دیا جائے گا، مجرموں کی نشاندہی کے لیے جدید فورنزک کے طریقے کو اپنایا جائے گا۔وفاقی وزیرِ قانون فروغ نسیم نے کہاکہ آرڈیننس کا مسودہ آئندہ ہفتے کابینہ اجلاس میں منظوری کے لیے پیش کیا جائے گا۔۔۔۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں