کراچی، پڑھے لکھے بے روزگار نے ڈگریاں جلا ڈالیں

کراچی کے علاقے ملیر کے رہائشی جاوید احمد مگسی نے بے روزگاری سے تنگ آ کر اپنی اصلی ڈگریاں جلا ڈالیں، نوجوان جاوید مگسی کا کہنا ہے کہ اس کا یہ اقدام حکومت اور سسٹم کے خلاف شدید احتجاج ہے اس نے بی اے کیا، کئی ڈپلومہ کورس بھی کیے لیکن نوکری نہیں ملی کیونکہ اس کے پاس سفارش اور ریفرنس نہیں ہے، جاوید مگسی شادی شدہ ہے اور دو بچوں کا باپ ہے، وہ 2007 سے بے روزگاری کی زندگی گزار رہا ہے، مزید مصیبت یہ کہ وہ ذہنی دباوَ اور پریشانی کے باعث ہیپاٹائٹس جیسے موذی مرض میں بھی مبتلا ہو گیا، نوجوان جاوید کا یہ انتہائی اقدام توجہ حاصل کرنے کے لیے ہے، وہ چاہتا ہے کہ اس کی یہ ویڈیو وائرل ہو جائے تو شاید اس کی طرف کسی کی توجہ ہو جائے وہ کہتا ہے کہ پاکستان میں پڑھے لکھے نوجوانوں کے ساتھ ظلم ہو رہا ہے جن میں سے میں بھی ہوں۔۔۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں